دھوپ کے رتھ پر ہفت افلاک

آشفتہ چنگیزی

دھوپ کے رتھ پر ہفت افلاک

آشفتہ چنگیزی

MORE BYآشفتہ چنگیزی

    دھوپ کے رتھ پر ہفت افلاک

    چوباروں کے سر پر خاک

    شہر ملامت آ پہنچا

    سارے مناظر عبرت ناک

    دریاؤں کی نذر ہوئے

    دھیرے دھیرے سب تیراک

    تیری نظر سے بچ پائیں

    ایسے کہاں کے ہم چالاک

    دامن بچنا مشکل ہے

    رستے جنوں کے آتش ناک

    اور کہاں تک صبر کریں

    کرنا پڑے گا سینہ چاک

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    دھوپ کے رتھ پر ہفت افلاک نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY