دل میں جو بات ہے بتاتے نہیں

عبد الحمید

دل میں جو بات ہے بتاتے نہیں

عبد الحمید

MORE BYعبد الحمید

    دل میں جو بات ہے بتاتے نہیں

    دور تک ہم کہیں بھی جاتے نہیں

    عکس کچھ دیر تک نہیں رکتے

    بوجھ یہ آئنے اٹھاتے نہیں

    یہ نصیحت بھی لوگ کرنے لگے

    اس طرح مفت دل گنواتے نہیں

    دور بستی پہ ہے دھواں کب سے

    کیا جلا ہے جسے بجھاتے نہیں

    چھوڑ دیتے ہیں اک شرر بے نام

    آگ لگ جاتی ہے لگاتے نہیں

    بھول جانا بھی اب نہیں آساں

    ورنہ یہ خفتیں اٹھاتے نہیں

    آپ اپنے میں جلتے بجھتے ہیں

    یہ تماشا کہیں دکھاتے نہیں

    RECITATIONS

    عبد الحمید

    عبد الحمید

    عبد الحمید

    دل میں جو بات ہے بتاتے نہیں عبد الحمید

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY