دل شہر تحیر ہے کہ وہ مملکت آرا

سید امین اشرف

دل شہر تحیر ہے کہ وہ مملکت آرا

سید امین اشرف

MORE BYسید امین اشرف

    دل شہر تحیر ہے کہ وہ مملکت آرا

    کیا سلطنت بلخ و سمرقند و بخارا

    مبہم ہے تری چشم کرم دیکھ تو یوں دیکھ

    جس طرح لپٹ جائے ستارے سے ستارہ

    اک چاند ہے آوارہ و بیتاب و فلک تاب

    اک چاند ہے آسودگیٔ ہجر کا مارا

    کچھ درخور جاں ہے تو یہی کنج ملاقات

    یہ عالم خاکی نہ ہمارا نہ تمہارا

    زنجیر گراں بار ہے یہ عشرت ساحل

    بہتا ہے تو رکتا ہی نہیں وقت کا دھارا

    جز حسرت بے نام نہیں گردش خوں اب

    چاندی جو ہوئے بال ملا ضبط کا یارا

    مأخذ :
    • کتاب : Bahar-e-ejaad (Pg. 25)
    • Author : Syed Amin Ashraf
    • مطبع : Urdu Monthly Shabkhoon Rani Mandi Allahabad (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY