دو پل کے ہیں یہ سب مہ و اختر نہ بھولنا

اجمل اجملی

دو پل کے ہیں یہ سب مہ و اختر نہ بھولنا

اجمل اجملی

MORE BYاجمل اجملی

    دو پل کے ہیں یہ سب مہ و اختر نہ بھولنا

    سورج غروب ہونے کا منظر نہ بھولنا

    کتنی طویل کیوں نہ ہو باطل کی زندگی

    ہر رات کا ہے صبح مقدر نہ بھولنا

    یادوں کے پھول گھر سے اٹھا کر چلے تو ہو

    دیکھو انہیں کسی جگہ رکھ کر نہ بھولنا

    ماں نے لکھا ہے خط میں جہاں جاؤ خوش رہو

    مجھ کو بھلے نہ یاد کرو گھر نہ بھولنا

    حق پر اگر چلو گے تو ہر آڑے وقت میں

    تم کو پناہ دے گی یہ چادر نہ بھولنا

    مآخذ :
    • کتاب : Urdu International (Pg. 146)
    • Author : Ashfaq Hussain
    • مطبع : 1296, Bloor Street West Toronto, Ontario, Canada ((Janury -April 1986))
    • اشاعت : (Janury -April 1986)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY