ہر جفا ان کی ہوئی ہم کو وفا سے بڑھ کر

شرف مجددی

ہر جفا ان کی ہوئی ہم کو وفا سے بڑھ کر

شرف مجددی

MORE BYشرف مجددی

    ہر جفا ان کی ہوئی ہم کو وفا سے بڑھ کر

    اب نکالیں وہ کوئی ظلم جفا سے بڑھ کر

    سر تسلیم ہے خم تیری رضا کے آگے

    دے وہ رتبہ جو ہے تسلیم و رضا سے بڑھ کر

    کمسنی جن کی ہمیں یاد ہے اور کل کی ہی بات

    آج انہیں دیکھیے کیا ہو گئے کیا سے بڑھ کر

    اللہ اللہ خصوصیت ذات حسنین

    ساری امت کے ہیں پوتوں سے نواسے بڑھ کر

    تجربہ کر لیا اور دیکھ لیا سب کو شرفؔ

    کوئی ہمدرد نہیں یاد خدا سے بڑھ کر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY