جب ملیں گے کہ اب ملیں گے آپ

بشیر الدین احمد دہلوی

جب ملیں گے کہ اب ملیں گے آپ

بشیر الدین احمد دہلوی

MORE BYبشیر الدین احمد دہلوی

    جب ملیں گے کہ اب ملیں گے آپ

    نہیں معلوم کب ملیں گے آپ

    جائیے جائیے خدا حافظ

    دیکھیے بچھڑے کب ملیں گے آپ

    حشر میں آپ ہی ملیں گے کیا

    ایک سے ایک سب ملیں گے آپ

    ہوگا میرے لیے وہ عید کا دن

    آپ سے آ کے جب ملیں گے آپ

    عہد کے ساتھ یہ بھی ہو ارشاد

    کس طرح اور کب ملیں گے آپ

    زندگی میں تو مل نہیں سکتے

    ہوں گا جب جاں بلب ملیں گے آپ

    وعدۂ وصل پر نہ کیوں خوش ہوں

    میں نے سمجھا کہ اب ملیں گے آپ

    نہیں دنیا میں جب بشیرؔ حزیں

    کس طرح اس سے اب ملیں گے آپ

    مأخذ :
    • Deewan-e-Basheerwebsite)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY