کون ہوتے ہیں وہ محفل سے اٹھانے والے

لالہ مادھو رام جوہر

کون ہوتے ہیں وہ محفل سے اٹھانے والے

لالہ مادھو رام جوہر

MORE BYلالہ مادھو رام جوہر

    کون ہوتے ہیں وہ محفل سے اٹھانے والے

    یوں تو جاتے بھی مگر اب نہیں جانے والے

    آہ پر سوز کی تاثیر بری ہوتی ہے

    خوش رہیں گے نہ غریبوں کو ستانے والے

    کوچۂ یار میں ہم کو تو قضا لائی ہے

    جان جائے گی مگر ہم نہیں جانے والے

    ہم کو کیا کام کسی اور پری سے توبہ

    آپ بھی خوب ہیں بے پر کی اڑانے والے

    جس قدر چاہیئے بٹھلائیے پہرے در پر

    بند رہنے کے نہیں خواب میں آنے والے

    کیا قیامت ہے کہ رلوا کے ہمیں اے جوہرؔ

    قہقہے مار کے ہنستے ہیں رلانے والے

    مآخذ:

    • کتاب : Intekhab Kalam Lala M.R Jauhar (Pg. 63)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY