خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا

داغؔ دہلوی

خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا

داغؔ دہلوی

MORE BY داغؔ دہلوی

    خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا

    جھوٹی قسم سے آپ کا ایمان تو گیا

    دل لے کے مفت کہتے ہیں کچھ کام کا نہیں

    الٹی شکایتیں ہوئیں احسان تو گیا

    ڈرتا ہوں دیکھ کر دل بے آرزو کو میں

    سنسان گھر یہ کیوں نہ ہو مہمان تو گیا

    کیا آئے راحت آئی جو کنج مزار میں

    وہ ولولہ وہ شوق وہ ارمان تو گیا

    دیکھا ہے بت کدے میں جو اے شیخ کچھ نہ پوچھ

    ایمان کی تو یہ ہے کہ ایمان تو گیا

    افشائے راز عشق میں گو ذلتیں ہوئیں

    لیکن اسے جتا تو دیا جان تو گیا

    گو نامہ بر سے خوش نہ ہوا پر ہزار شکر

    مجھ کو وہ میرے نام سے پہچان تو گیا

    بزم عدو میں صورت پروانہ دل مرا

    گو رشک سے جلا ترے قربان تو گیا

    ہوش و حواس و تاب و تواں داغؔ جا چکے

    اب ہم بھی جانے والے ہیں سامان تو گیا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    غلام علی

    غلام علی

    امید علی خان

    امید علی خان

    نامعلوم

    نامعلوم

    شمونا رائے بسواس

    شمونا رائے بسواس

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    خاطر سے یا لحاظ سے میں مان تو گیا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY