کھنچ کے محبوب کے دامن کی طرف

عرش ملسیانی

کھنچ کے محبوب کے دامن کی طرف

عرش ملسیانی

MORE BYعرش ملسیانی

    کھنچ کے محبوب کے دامن کی طرف

    آ گئے اور بھی الجھن کی طرف

    تم چھپاتے رہو کتنا اس کو

    بجلیاں آئیں گی خرمن کی طرف

    ہر طرف نور کا تڑکا دیکھا

    کون آیا مرے آنگن کی طرف

    اے چمن والو رکوں یا جاؤں

    اک دھواں سا ہے نشیمن کی طرف

    خیر مقدم کو جھکیں گی شاخیں

    اک ذرا آؤ تو گلشن کی طرف

    عرشؔ کس دوست کو اپنا سمجھوں

    سب کے سب دوست ہیں دشمن کی طرف

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY