کتنا دشوار تھا دنیا یہ ہنر آنا بھی

وسیم بریلوی

کتنا دشوار تھا دنیا یہ ہنر آنا بھی

وسیم بریلوی

MORE BYوسیم بریلوی

    کتنا دشوار تھا دنیا یہ ہنر آنا بھی

    تجھ سے ہی فاصلہ رکھنا تجھے اپنانا بھی

    کیسی آداب نمائش نے لگائیں شرطیں

    پھول ہونا ہی نہیں پھول نظر آنا بھی

    دل کی بگڑی ہوئی عادت سے یہ امید نہ تھی

    بھول جائے گا یہ اک دن ترا یاد آنا بھی

    جانے کب شہر کے رشتوں کا بدل جائے مزاج

    اتنا آساں تو نہیں لوٹ کے گھر آنا بھی

    ایسے رشتے کا بھرم رکھنا کوئی کھیل نہیں

    تیرا ہونا بھی نہیں اور ترا کہلانا بھی

    خود کو پہچان کے دیکھے تو ذرا یہ دریا

    بھول جائے گا سمندر کی طرف جانا بھی

    جاننے والوں کی اس بھیڑ سے کیا ہوگا وسیمؔ

    اس میں یہ دیکھیے کوئی مجھے پہچانا بھی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    وسیم بریلوی

    وسیم بریلوی

    مآخذ:

    • کتاب : Aankhon Ankhon Rahe (Pg. 32)
    • Author : Waseem Barelvi
    • مطبع : Maktaba Jamia Ltd. (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY