مکھڑا وہ بت جدھر کرے گا

غمگین دہلوی

مکھڑا وہ بت جدھر کرے گا

غمگین دہلوی

MORE BYغمگین دہلوی

    مکھڑا وہ بت جدھر کرے گا

    بندہ سجدہ ادھر کرے گا

    کرنا ہو جسے کہ خانہ ویراں

    دل میں ترے وہ گھر کرے گا

    وہ لطف اٹھائے گا سفر کا

    آپ اپنے میں جو سفر کرے گا

    واعظ یہ سخن ترا کبھی آہ

    ہم میں بھی کچھ اثر کرے گا

    اے شیخ تجھے بتوں سے انکار

    واللہ بہت ضرر کرے گا

    ہو جس کو تمام شب سر شام

    کیا وصل میں وہ سحر کرے گا

    غمگیںؔ جو بیٹھے اس کے در پر

    وہ اس کو نہ در بدر کرے گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY