نہ پردہ کھولیو اے عشق غم میں تو میرا

زین العابدین خاں عارف

نہ پردہ کھولیو اے عشق غم میں تو میرا

زین العابدین خاں عارف

MORE BYزین العابدین خاں عارف

    نہ پردہ کھولیو اے عشق غم میں تو میرا

    کہیں نہ سامنے ان کے ہو زرد رو میرا

    تم اپنی زلف سے پوچھو مری پریشانی

    کہ حال اس کو ہے معلوم ہو بہو میرا

    اگرچہ لاکھ رفو گر نے دل کیا بہتر

    یہ جب بھی ہو نہ سکا زخم دل رفو میرا

    فقط وہ اس لیے آتے ہیں جانب زنداں

    کہ پھنس کے گھٹنے لگے طوق میں گلو میرا

    نشانہ تیر نگہ کا بہ دل کروں عارفؔ

    لڑائے آنکھ اگر مجھ سے جنگجو میرا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY