رشتہ بحال کاش پھر اس کی گلی سے ہو

ارشاد خان سکندر

رشتہ بحال کاش پھر اس کی گلی سے ہو

ارشاد خان سکندر

MORE BYارشاد خان سکندر

    رشتہ بحال کاش پھر اس کی گلی سے ہو

    جی چاہتا ہے عشق دوبارہ اسی سے ہو

    انجام جو بھی ہو مجھے اس کی نہیں ہے فکر

    آغاز داستان سفر آپ ہی سے ہو

    خواہش ہے پہنچوں عشق کے میں اس مقام پر

    جب ان کا سامنا مری دیوانگی سے ہو

    کپڑوں کی وجہ سے مجھے کم تر نہ آنکئے

    اچھا ہو میری جانچ پرکھ شاعری سے ہو

    اب میرے سر پہ سب کو ہنسانے کا کام ہے

    میں چاہتا ہوں کام یہ سنجیدگی سے ہو

    دنیا کے سارے کام تو کرنا دماغ سے

    لیکن جب عشق ہو تو سکندرؔ وہ جی سے ہو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    ارشاد خان سکندر

    ارشاد خان سکندر

    RECITATIONS

    ارشاد خان سکندر

    ارشاد خان سکندر

    ارشاد خان سکندر

    رشتہ بحال کاش پھر اس کی گلی سے ہو ارشاد خان سکندر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY