رو چلے چشم سے گریہ کی ریاضت کر کے

علی اکبر ناطق

رو چلے چشم سے گریہ کی ریاضت کر کے

علی اکبر ناطق

MORE BYعلی اکبر ناطق

    رو چلے چشم سے گریہ کی ریاضت کر کے

    آنکھیں بے نور ہیں یوسف کی زیارت کر کے

    دل کا احوال تو یہ ہے کہ یہ چپ چاپ فقیر

    لگ کے دیوار سے بیٹھا تجھے رخصت کر کے

    اتنا آساں نہیں پانی سے شبیہیں دھونا

    خود بھی روئے گا مصور یہ قیامت کر کے

    سرفرازی اسے بخشی ہے جہاں نے مطلق

    دار تک پہنچا اگر کوئی بھی ہمت کر کے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے