سجدے جبین شوق کے اب رائیگاں نہیں

مخمور جالندھری

سجدے جبین شوق کے اب رائیگاں نہیں

مخمور جالندھری

MORE BYمخمور جالندھری

    سجدے جبین شوق کے اب رائیگاں نہیں

    تو بے حجاب انجمن آرا کہاں نہیں

    میں میر کارواں ہوں پس کارواں نہیں

    ہاتھوں میں میرے دامن منزل کہاں نہیں

    موجودگئ جنت و دوزخ سے ہے عیاں

    رحمت ہے ایک بحر مگر بیکراں نہیں

    چاہے حجاب میں رہو تو چاہے بے حجاب

    ہم تم ہی تو ہیں اور کوئی درمیاں نہیں

    برق جمال دوست نہ ہو اس پہ شعلہ زن

    تیرا بھی گھر ہے صرف مرا آشیاں نہیں

    دلچسپیاں بہت سی ہیں اس اختصار میں

    کچھ غم نہیں شباب اگر جاوداں نہیں

    ساکت فلک کو مفت میں ظالم بنا دیا

    گردش میں ہے زمین فقط آسماں نہیں

    ناکام تر ہیں میری شکستہ نصیبیاں

    مخمورؔ صرف زیست ہی نا کامراں نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY