سوچتے ہیں کہ بلبلہ ہو جائیں

اشہد بلال ابن چمن

سوچتے ہیں کہ بلبلہ ہو جائیں

اشہد بلال ابن چمن

MORE BY اشہد بلال ابن چمن

    سوچتے ہیں کہ بلبلہ ہو جائیں

    چند لمحے جئیں فنا ہو جائیں

    دوستی اپنی دیر پا کر لیں

    آؤ کچھ دن کو ہم جدا ہو جائیں

    ساتھ تو ہے تو منزلیں اپنی

    ورنہ بھٹکیں تو لاپتہ ہو جائیں

    ہم کہ الفت میں جان تک دے دیں

    اور بچھڑیں تو سانحہ ہو جائیں

    رفتہ رفتہ تجھے تراشیں ہم

    دھیرے دھیرے تری قبا ہو جائیں

    یاد رکھنا بھی اک عبادت ہے

    کیوں نہ ہم ان کا حافظہ ہو جائیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY