تجھ بنا دل کو بے قراری ہے

فائز دہلوی

تجھ بنا دل کو بے قراری ہے

فائز دہلوی

MORE BYفائز دہلوی

    تجھ بنا دل کو بے قراری ہے

    دم بدم مجھ کو آہ و زاری ہے

    ہاتھ تیرے جو دیکھی ہے تلوار

    آرزو دل کو جاں سپاری ہے

    مجھ کو اوروں سے کچھ نہیں ہے کام

    تجھ سے ہر دم امیدواری ہے

    ہم سے تجھ کو نہیں ملاپ کبھی

    یہ مگر جگ میں طور یاری ہے

    آہ کوں دل میں میں چھپاتا ہوں

    لازم عشق پردہ داری ہے

    گر رہا تیری راہ پر فائزؔ

    عشق کی شرط خاکساری ہے

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    تجھ بنا دل کو بے قراری ہے فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY