تم نے سچ بولنے کی جرأت کی

سلیم کوثر

تم نے سچ بولنے کی جرأت کی

سلیم کوثر

MORE BYسلیم کوثر

    تم نے سچ بولنے کی جرأت کی

    یہ بھی توہین ہے عدالت کی

    منزلیں راستوں کی دھول ہوئیں

    پوچھتے کیا ہو تم مسافت کی

    اپنا زاد سفر بھی چھوڑ گئے

    جانے والوں نے کتنی عجلت کی

    میں جہاں قتل ہو رہا ہوں وہاں

    میرے اجداد نے حکومت کی

    پہلے مجھ سے جدا ہوا اور پھر

    عکس نے آئینے سے ہجرت کی

    میری آنکھوں پہ اس نے ہاتھ رکھا

    اور اک خواب کی مہورت کی

    اتنا مشکل نہیں تجھے پانا

    اک گھڑی چاہیئے ہے فرصت کی

    ہم نے تو خود سے انتقام لیا

    تم نے کیا سوچ کر محبت کی

    کون کس کے لیے تباہ ہوا

    کیا ضرورت ہے اس وضاحت کی

    عشق جس سے نہ ہو سکا اس نے

    شاعری میں عجب سیاست کی

    یاد آئی تو ہے شناخت مگر

    انتہا ہو گئی ہے غفلت کی

    ہم وہاں پہلے رہ چکے ہیں سلیمؔ

    تم نے جس دل میں اب سکونت کی

    مأخذ :
    • کتاب : Zara Musam Badalne Do (Pg. 29)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے