وہ جب بھی پکارے گا یہاں آن رہیں گے

معید رشیدی

وہ جب بھی پکارے گا یہاں آن رہیں گے

معید رشیدی

MORE BYمعید رشیدی

    وہ جب بھی پکارے گا یہاں آن رہیں گے

    ہم خاک نشیں بے سر و سامان رہیں گے

    ہنگام جہاں تجھ میں پریشان رہیں گے

    یا دشت طلسمات میں حیران رہیں گے

    سایہ بھی یہاں دور ذرا ہم سے چلے گا

    یہ شہر ہی ایسا ہے کہ انجان رہیں گے

    اے عقل نہیں آئیں گے باتوں میں تری ہم

    نادان تھے نادان ہیں نادان رہیں گے

    سن خوئے طرب شہر نگاراں کی طرف جا

    ہم اہل جنوں سوئے بیابان رہیں گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY