ذرے ذرے میں مہک پیار کی ڈالی جائے

دانشؔ علیگڑھی

ذرے ذرے میں مہک پیار کی ڈالی جائے

دانشؔ علیگڑھی

MORE BY دانشؔ علیگڑھی

    ذرے ذرے میں مہک پیار کی ڈالی جائے

    بو تعصب کی ہر اک دل سے نکالی جائے

    اپنے دشمن کو بھی خود بڑھ کے لگا لو سینے

    بات بگڑی ہوئی اس طرح بنا لی جائے

    آپ خوش ہو کے اگر ہم کو اجازت دے دیں

    آپ کے نام سے اک بزم سجا لی جائے

    ہو کے مجبور یہ بچوں کو سبق دینا ہے

    اب قلم چھوڑ کے تلوار اٹھا لی جائے

    سوچ کر عرض طلب وقت کے سلطان سے کر

    مانگنے والے تری بات نہ خالی جائے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY