आदमी की ज़िन्दगी

फ़हमीदा रियाज़

आज की किताबें, कराची
1999 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

نسائی شاعری کے حوالے سے فہمیدہ ریاض کی شاعری ایک نئے زاویہ کی جانب سفر کرتی ہوئی نظر آتی ہے جس میں عورت اپنے وجود کا بھر پور احساس کراتی ہے ۔فہمیدہ ریاض کی عورت کسی اورکے وجود کا سایہ نہیں بلکہ خو د ایک مکمل شخصیت کے طور پر سامنے آتی ہے ۔ انہوں نے روایتی نظریات سے کنار ہ کشی کر تے ہوئے نئی فضا میں سانس لیتے ہوئے ہی ’’مقابلہ ٔ حسن‘‘ جیسی نظم لکھی ۔ جس میں اس نظریہ کا بھر پور احتجاج ہے جو عورتوں کے لیے صدیوں سے استعمال ہوتا رہا ہے ۔اسی لیے فہمیدہ کے متعلق کہاجاتا ہے کہ وہ پہلی شاعرہ ہیں جس نے عورت کی آرکی ٹائیپ تشخص کواجاگر کیا ۔نسائی حسیت اور تانیثیت کے لیے انہوں نے آواز بلند کی، اس آواز میں یہ احساس ہوتا ہے کہ انہوں نے اپنے آنسوؤں کو ہنسی کے خوش رنگ دامن میں سلیقہ سے چھپایا بھی ہے ۔ یہ زیر لب مسکراہٹ ان کی اکثر ان کی تخلیقی تحریروں میں نظر آتی ہے ۔ یہ ان کا آخری شعری مجموعہ ہے ۔ اس مجموعہ میں تانیثی حسیت ، نسائی کیفیت ،سماجی مسائل ، سیاسی ظلم و جبر جیسے منفرد موضوعات پڑھنے کوملتے ہیں ۔ ان کے متعلق کہا جاتا ہے کہ شاعری میں متنوع لہجوں کی مالک تھیں جس کا احساس آپ کوبھی اس کے مطالعہ سے ہوگا ۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम