alamaton ka zawal

इन्तिज़ार हुसैन

मकतबा जामिया लिमिटेड, नई दिल्ली
1983 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

انتظار حسین کا شمار ارد کے اہم افسانہ نگاروں میں ہوتا ہے ان کے ناول اور افسانے ادب کی بلندی پر فائز ہیں ۔ ان کی تحریروں کا کمال یہ ہے کہ وہ علامتی اور استعاراتی اسلوب کو نت نئے ڈھنگ سے بالکل اچھوتے انداز میں استعمال کرنے والے فن کار تھے ۔ان کا فن عوامی نہیں تھا بلکہ عام قاری کی فہم و بصارت سے کوسوں دور نظر آتا ہے ۔ ان کی تخلیق کا مطالعہ کر نے کے لیے وسیع مطالعہ ضروری ہے ۔ لیکن ان کی یہ کتاب تخلیق پر نہیں بلکہ تنقید پر ہے اور مستقل لکھے گئے مضامین نہیں ہیں بلکہ وہ خود لکھتے ہیں ’’ باقاعدہ تنقیدی مقالہ لکھنے کا تو میں اہل ہی نہیں۔ یہ تو بس چیزوں کے بارے میں ، تحریروں کے بارے میں ،ادب کے سوالات کے بارے میں ، تہذیب کے معاملات کے بارے میں ایک حقیر افسانہ نگار کے رد عمل ہیں۔‘‘ اس متعلق سمجھ سکتے ہیں کہ ایک تخلیق کار کی نظر کیا ہوتی ہے وہ علامتوں کو کس طرح تراشتا ہے اور کہانیوں میں جان ڈال دیتا ہے ۔اس کتاب میں بہت ہی قیمتی اور نادر خیالات سے روشناس ہوں گے ۔ کتاب کودو حصوں میں رکھا گیا ہے ۔ پہلے حصے میں پندرہ عناوین کے تحت ادب کے مختلف مسائل پر گفتگوہے جن میں سے ایک علامتوں کا زوال بھی ہے ۔ کتاب کے دوسرے حصے میں تیرہ شخصیات اور تخلیقا ت پر گفتگو ہے ۔ کتا ب کا ایک ایک جملہ نظر و نظریہ سے بھر پور ہے ۔ اعلیٰ ادبی ذوق رکھنے والوں کے لیے قیمتی اثاثہ سے کم نہیں ہے ۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम