अनीस

नैयर मसूद

आज की किताबें, कराची
2005 | अन्य
  • उप शीर्षक

    सवानेह

  • सहयोगी

    अजमल कमाल

  • श्रेणियाँ

    जीवनी

  • पृष्ठ

    379

पुस्तक: परिचय

परिचय

انیس صدی تقریبات کے بعد میر ببر علی انیس پر کئی طرح کے تحقیقی کام ہوئے ۔ سلام و مرثیے جمع کیے گئے ، غز ل گوئی پر کتاب لکھی گئی ، ان کی رباعیات کو یکجا کیا گیا ،اسی طرح سے ان کی سوانح لکھنے کی ذمہ داری مصنف کے والد محترم سید مسعود حسن رضوی ادیب کو دی گئی تھی لیکن ان کی وفات کے بعد ان کے لڑکے نیر مسعود نے تکمیل تک پہنچا ئی۔ یہ بہت ہی تفصیلی سوانح ہے۔ مصنف انیس کے والد محتر م مرزا خلیق اور فیض آباد سے سوانح شروع کرتے ہیں ۔ دوسرے باب میں انیس کی ولادت سے شادی تک کا ذکر ہے ۔ تیسرے باب میں لکھنؤ ہے۔ انیس جب لکھنؤ تشریف لے گئے تھے اس وقت وہاں کے ادبی حالات اور مختلف شاعروں کے ساتھ جو معاملات تھے ان کا ذکر ہے۔ چوتھے باب میں انیس کی شخصیت ہے ،ان کے عادات و اطوار ، معمولات ، دیگر فنون سے وابستگی وغیرہ پر معلومات بہم پہنچا ئی گئی ہے ۔پانچواں باب امجد علی شاہ اور چھٹا باب واجد علی شاہ کے زمانے پر مشتمل ہے ۔ ساتواں باب سلطنت اودھ کا ختم ہونا، آٹھویں باب میں انگریزوں کا عہد ہے جس میں عظیم آباد کا سفر بھی ہے ۔نواں باب راجہ باز ار کی سکونت ، گیارہواں باب عمر کا آخری سال اور بارہواں باب وفات پرہے۔اس کتاب میں مصنف نے مستندحوالہ جات کا بھر پور استعمال کیا ہے ۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम