jadeed shayeri

इबादत बरेलवी

एजुकेशनल बुक हाउस, अलीगढ़
1983 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

جیسے ہی داغ دہلوی کازمانہ ختم ہوتا ہے اروشاعری میں جدید شاعری کادور شروع ہوجاتا ہے ۔ داغ کے شاگر د ہی نئی شاعری کی بنیاد کومضبوط کر تے ہیں خواہ ان میں اقبال ہوں یا پھر جگر ۔ ان کے بعد کا جدید غزل کا جو منظر نامہ ابھر تا ہے وہ ماضی کی شاعری سے بالکل مختلف ہوتا ہے، جن میں موضوعات متنوع ہوجاتے ہیں اور علامت و استعارات کی زبان استعمال ہونے لگتی ہے ۔انجمن پنجاب سے اس کے اثرا ت شروع ہوجاتے ہیں جہاں روایتی شاعری سے حالی واقبال دور ہوتے چلے جاتے ہیں اسی عہد میں ایک بڑانام اکبر الہ آبادی کا سامنے آتا ہے جن کی شاعری سب سے الگ ہوتی ہے پھر جدید شاعری کے عناصر اربعہ ابھر کر سامنے آتے ہیں الغرض اس طریقے سے جدید شاعری کی آوازبلند ہوتی چلی جاتی ہے ۔ اس کتاب میں شروع میں جدید شاعر ی پر نظریاتی بحث ہے پھر جدت پسند ی اور جدید رجحانا ت پر گفتگو ہے ۔ شروع میں حالی اقبال اور جوش کا ذکر کرتے ہیں پھر ترقی پسند تحریک کے تحت جو عریانیت آئی تھی اور جدیدیت نے جس ابہامیت کو ترجیح دی تھی، اس کاذکر ہے ۔ تقسیم ہند کے وقت غزل نے نئے میلانات حاصل کیے جن میں فیض ، مخدوم، ساحر ، مجروح ، احمد ندیم قاسمی وغیرہ کا ذکر ہوتا ہے ان کی غزلوں پر بھی تفصیلی گفتگو مصنف نے کی ہے ۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम