مصنف : زیب غوری

ناشر : شب خون کتاب گھر، الہ آباد

سن اشاعت : 1976

زبان : Urdu

موضوعات : شاعری

ذیلی زمرہ جات : غزل

صفحات : 166

معاون : مظہر امام

زرد زرخیز

کتاب: تعارف

"زرد زرخیز" زیب غوری کا پہلا شعری مجموعہ ہے۔ زیب غوری کے شعری اسلوب پر غالب کے اثرات نمایاں ہیں۔ خاص کر ان کے اس پہلے مجموعے کی شاعری پر غالب کے واضح اور نمایاں اثرات موجود ہیں۔ کہیں کہیں پورے مصرعے غالب کی یاد دلاتے ہیں تو کہیں لفظیات کی سطح پر اثر پذیری دیکھنے کو ملتی ہے۔ زیب کی یہ اثر پذیری نہ صرف اسلوب کی سطح پر ہے بلکہ وہ فکری اعتبار سے بھی زیادہ قریب ہیں کیونکہ غالب کی طرح زیب غوری کائنات کو ایک عاشق یا عام انسان کی نگاہ سے دیکھنے کی بجائے ایک مفکر اور دانشور کی نگاہ سے دیکھنا زیادہ پسند کرتے ہیں۔ اسی لیے غالب کی طرح زیب غوری بھی اپنی شاعری میں تخلیق کائنات کے بارے میں سوال اٹھاتے ہیں۔ وجود اور عدم کی پیچیدگیوں کو سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں۔ انسان، اس کے وجود اور تخلیق کائنات کے ابہام کو جاننے کے لیے بے چین رہتے ہیں۔ دراصل زیب کی پوری شاعری انسانی زندگی کے نشیب و فراز کی شاعری ہے اور زندگی صرف عصری مسائل و موضوعات کو محیط نہیں ہوتی ہے بلکہ اس کا رشتہ ماضی سے بھی ہوتا ہے اسی لیے زیب کی شاعری میں موجودہ عہد کی زندگی کے آشوب کے ساتھ ساتھ ماضی کے عرفان اور اس کے شعور کا بھی اظہار ہوتا ہے۔

.....مزید پڑھئے

مصنف: تعارف

نام احمد حسین خاں اور تخلص زیب ہے۔ ۱۹۲۸ء کو کان پور میں پیدا ہوئے۔ بی اے کرائسٹ چرچ کالج، کان پور سے کیا۔ شعری اصلاح ثاقب کان پوری سے لی۔عمر کا زیادہ حصہ کان پور میں گزرا۔ یکم اگست۱۹۸۵ء کو کراچی میں انتقال کرگئے۔پہلا مجموعۂ کلام ’’زرد زرخیز‘‘ اکتوبر ۱۹۷۶ء میں’شب خون‘ کتاب گھر الہ آباد نے شائع کیا۔دوسرا مجموعہ ’’چاک ‘‘ان کے انتقال کے بعد۱۹۸۵ میں کان پور اکادمی ، کراچی نے شائع کیا۔ بحوالۂ:پیمانۂ غزل(جلد دوم)،محمد شمس الحق،صفحہ:227

.....مزید پڑھئے

مصنف کی مزید کتابیں

مصنف کی دیگر کتابیں یہاں پڑھئے۔

مزید

قارئین کی پسند

اگر آپ دوسرے قارئین کی دلچسپیوں میں تجسس رکھتے ہیں، تو ریختہ کے قارئین کی پسندیدہ

مزید

مقبول و معروف

مقبول و معروف اور مروج کتابیں یہاں تلاش کریں

مزید

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے