بچے من کے سچے سارے جگ کی آنکھ کے تارے

ساحر لدھیانوی

بچے من کے سچے سارے جگ کی آنکھ کے تارے

ساحر لدھیانوی

MORE BY ساحر لدھیانوی

    بچے من کے سچے سارے جگ کی آنکھ کے تارے

    یہ وہ ننھے پھول ہیں جو بھگوان کو لگتے پیارے

    خود روٹھیں خود من جائیں پھر ہمجولی بن جائیں

    جھگڑا جس کے ساتھ کریں اگلے ہی پل پھر بات کریں

    ان کو کسی سے بیر نہیں ان کے لئے کوئی غیر نہیں

    ان کا بھولا پن ملتا ہے سب کو بانہہ پسارے

    انساں جب تک بچہ ہے تب تک سمجھو سچا ہے

    جوں جوں اس کی عمر بڑھے من پر جھوٹ کا میل چڑھے

    کرودھ بڑھے نفرت گھیرے لالچ کی عادت گھیرے

    بچپن ان پاپوں سے ہٹ کر اپنی عمر گزارے

    تن کومل من سندر ہیں بچے بڑوں سے بہتر ہیں

    ان سے چھوت اور چھات نہیں جھوٹی ذات اور بات نہیں

    بھاشا کی تکرار نہیں مذہب کی دیوار نہیں

    ان کی نظروں میں اک ہیں مندر مسجد گردوارے

    مآخذ:

    • کتاب : Kulliyat-e-Sahir Ludhianvi (Pg. 489)
    • Author : SAHIR LUDHIANVI
    • مطبع : Farid Book Depot (Pvt.) Ltd

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY