زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

ساحر لدھیانوی

زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

ساحر لدھیانوی

MORE BY ساحر لدھیانوی

    زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

    ایک انجان حسینہ سے ملاقات کی رات

    ہائے وہ ریشمیں زلفوں سے برستا پانی

    پھول سے گالوں پہ رکنے کو ترستا پانی

    دل میں طوفان اٹھائے ہوئے جذبات کی رات

    زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

    ڈر کے بجلی سے اچانک وہ لپٹنا اس کا

    اور پھر شرم سے بل کھا کے سمٹنا اس کا

    کبھی دیکھی نہ سنی ایسی طلسمات کی رات

    زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

    سرخ آنچل کو دبا کر جو نچوڑا اس نے

    دل پہ جلتا ہوا اک تیرا سا چھوڑا اس نے

    آگ پانی میں لگاتے ہوئے حالات کی رات

    زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

    میرے نغموں میں جو بستی ہے وہ تصویر تھی وہ

    نوجوانی کے حسیں خواب کی تعبیر تھی وہ

    آسمانوں سے اتر آئی تھی جو رات کی رات

    زندگی بھر نہیں بھولے گی وہ برسات کی رات

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    محمد رفیع

    محمد رفیع

    مآخذ:

    • کتاب : Kulliyat-e-Sahir Ludhianvi (Pg. 396)
    • Author : SAHIR LUDHIANVI
    • مطبع : Farid Book Depot (Pvt.) Ltd

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY