اپنی دھن میں رہتا ہوں

ناصر کاظمی

اپنی دھن میں رہتا ہوں

ناصر کاظمی

MORE BY ناصر کاظمی

    اپنی دھن میں رہتا ہوں

    میں بھی تیرے جیسا ہوں

    او پچھلی رت کے ساتھی

    اب کے برس میں تنہا ہوں

    تیری گلی میں سارا دن

    دکھ کے کنکر چنتا ہوں

    مجھ سے آنکھ ملائے کون

    میں تیرا آئینہ ہوں

    میرا دیا جلائے کون

    میں ترا خالی کمرہ ہوں

    تیرے سوا مجھے پہنے کون

    میں ترے تن کا کپڑا ہوں

    تو جیون کی بھری گلی

    میں جنگل کا رستہ ہوں

    آتی رت مجھے روئے گی

    جاتی رت کا جھونکا ہوں

    اپنی لہر ہے اپنا روگ

    دریا ہوں اور پیاسا ہوں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    غلام علی

    غلام علی

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    فہد حسین

    اپنی دھن میں رہتا ہوں فہد حسین

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites