آ کے وہ مجھ خستہ جاں پر یوں کرم فرما گیا

حمید جالندھری

آ کے وہ مجھ خستہ جاں پر یوں کرم فرما گیا

حمید جالندھری

MORE BYحمید جالندھری

    آ کے وہ مجھ خستہ جاں پر یوں کرم فرما گیا

    کوئی دم بیٹھا دل ناشاد کو بہلا گیا

    کون لا سکتا ہے تاب اس کے رخ پر نور کی

    جس طرف سے ہو کے گزرا برق سی لہرا گیا

    آنکھ بھر کر دیکھ لینا کچھ خطا ایسی نہ تھی

    کیا خبر کیوں ان کو مجھ پر اتنا غصہ آ گیا

    پھر گئی اک اور ہی دنیا نظر کے سامنے

    بیٹھے بیٹھے کیا بتاؤں کیا مجھے یاد آ گیا

    یک بیک مغموم کے چہرے پہ رونق آ گئی

    کون جانے آنکھوں آنکھوں میں وہ کیا سمجھا گیا

    یوں تو ہم نے بھی اسے دیکھا ہے لیکن اے حمیدؔ

    جانے تجھ کو کون سا انداز اس کا بھا گیا

    مأخذ :
    • کتاب : Shaam e Sehra (Pg. 176)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY