آدمی جب خون کا پیاسا ہوا

سید احسن جاوید

آدمی جب خون کا پیاسا ہوا

سید احسن جاوید

MORE BY سید احسن جاوید

    آدمی جب خون کا پیاسا ہوا

    عظمت انسان بھی دھوکا ہوا

    آپ کو شہرت ملی اچھا ہوا

    میرا کیا ہے میں اگر رسوا ہوا

    قبر پر آؤ گے رونے کے لئے

    میری جاں یہ بھی کوئی وعدہ ہوا

    وعدۂ فردا پہ جو ٹلتا رہے

    وہ مریض ہجر کب اچھا ہوا

    جب مری آوارگی حد سے بڑھی

    آبلہ پا لالۂ صحرا ہوا

    اب چمن میں وہ سکوں احسنؔ کہاں

    اک نشیمن تھا ملا جلتا ہوا

    مآخذ:

    • کتاب : Shora-e-London (Pg. 19)
    • Author : Jauhar Zahiri
    • مطبع : Books From India (U.K) Ltd. 45, Museum Street, Londan W.C-1 (1985)
    • اشاعت : 1985

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY