آگ سینوں میں جلا کر رکھیے

عبد السلام

آگ سینوں میں جلا کر رکھیے

عبد السلام

MORE BYعبد السلام

    آگ سینوں میں جلا کر رکھیے

    خواب آنکھوں میں بسا کر رکھیے

    راحتوں سے لگے صدمے بھی ہیں

    دل کو مضبوط بنا کر رکھیے

    عید کا دن ہے گلے مل لیجے

    اختلافات ہٹا کر رکھیے

    نفرتیں دل سے نکل جائیں گی

    ہاتھ دشمن سے ملا کر رکھیے

    تاب زنجیر نہیں ہے دل کو

    زلف پیچاں کو سجا کر رکھیے

    یاد آ جائے گی دیوانے کی

    پھول جوڑے میں لگا کر رکھیے

    جانے والا نہ کبھی آئے گا

    دل میں یادوں کو بسا کر رکھیے

    عشق کی آگ ہے منہ زور سلامؔ

    اپنے دامن کو بچا کر رکھیے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY