آہ اے سودائے خام آرزو

اکبر حیدری کشمیری

آہ اے سودائے خام آرزو

اکبر حیدری کشمیری

MORE BYاکبر حیدری کشمیری

    آہ اے سودائے خام آرزو

    تا بہ کے آخر نظام آرزو

    ضبط آہ دل شکن اور میں حزیں

    کر رہا ہوں احترام آرزو

    ہوشیار اے انفعال کیف زا

    حسن تک پہنچا پیام آرزو

    چشم لطف آگیں نئے انداز سے

    لے رہی ہے انتقام آرزو

    اہل دل زندہ ہیں کس امید پر

    نظم دنیا ہے نظام آرزو

    یاس کی گنجائشیں کس دل میں ہیں

    لے رہا ہے کون نام آرزو

    بزم انجم جب سراپا گوش تھی

    کاش تم سنتے پیام آرزو

    آہ اب خود دارئ اکبر کہاں

    ہو گئی وہ بھی غلام آرزو

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY