آہ بیمار کارگر نہ ہوئی

یگانہ چنگیزی

آہ بیمار کارگر نہ ہوئی

یگانہ چنگیزی

MORE BYیگانہ چنگیزی

    آہ بیمار کارگر نہ ہوئی

    چرخ کانپا مگر سحر نہ ہوئی

    صبح محشر ہوئی شب تاریک

    صورت یار جلوہ گر نہ ہوئی

    شب امید کٹ گئی لیکن

    زندگی اپنی مختصر نہ ہوئی

    دور سے آج ان کو دیکھ لیا

    دل کو تسکیں ہوئی مگر نہ ہوئی

    آنکھوں آنکھوں میں لے لیا وعدہ

    کانوں کان ایک کو خبر نہ ہوئی

    اف ری چشم عتاب اف رے جلال

    برق سوزاں ہوئی نظر نہ ہوئی

    فکر انجام و حسرت آغاز

    دو گھڑی چین سے بسر نہ ہوئی

    کھلنے والا نہیں در توبہ

    فکر انجام وقت پر نہ ہوئی

    ایسا رونا بھی کوئی رونا ہے

    آستین آنسوؤں سے تر نہ ہوئی

    ہٹ کے بالیں سے لوگ روتے ہیں

    جیسے بیمار کو خبر نہ ہوئی

    لٹ گیا سارا کارواں عدم

    ایک کو ایک کی خبر نہ ہوئی

    نیم جاں چھوڑ کر چلا قاتل

    نگہ یاسؔ کارگر نہ ہوئی

    مأخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-Yagana (Pg. 296)
    • Author : Meerza Yagana Changezi Lukhnawi
    • مطبع : Farib Book Depot (P) Ltd. (2005)
    • اشاعت : 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے