آہن میں ڈھلتی جائے گی اکیسویں صدی

بشیر بدر

آہن میں ڈھلتی جائے گی اکیسویں صدی

بشیر بدر

MORE BY بشیر بدر

    آہن میں ڈھلتی جائے گی اکیسویں صدی

    پھر بھی غزل سنائے گی اکیسویں صدی

    بغداد دلی ماسکو لندن کے درمیاں

    بارود بھی بچھائے گی اکیسویں صدی

    جل کر جو راکھ ہو گئیں دنگوں میں اس برس

    ان جھگیوں میں آئے گی اکیسویں صدی

    تہذیب کے لباس اتر جائیں گے جناب

    ڈالر میں یوں نچائے گی اکیسویں صدی

    لے جا کے آسمان پہ تاروں کے آس پاس

    امریکہ کو گرائے گی اکیسویں صدی

    اک یاترا ضرور ہو نناوے کے پاس

    رتھ پر سوار آئے گی اکیسویں صدی

    پھر سے خدا بنائے گا کوئی نیا جہاں

    دنیا کو یوں مٹائے گی اکیسویں صدی

    کمپیوٹروں سے غزلیں لکھیں گے بشیرؔ بدر

    غالبؔ کو بھول جائے گی اکیسویں صدی

    مآخذ:

    • کتاب : Aahat (Pg. 35)
    • Author : Bashir Badar
    • مطبع : M.R. Publications (2011)
    • اشاعت : 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY