آج مدت میں وہ یاد آئے ہیں

جاں نثاراختر

آج مدت میں وہ یاد آئے ہیں

جاں نثاراختر

MORE BY جاں نثاراختر

    آج مدت میں وہ یاد آئے ہیں

    در و دیوار پہ کچھ سائے ہیں

    آبگینوں سے نہ ٹکرا پائے

    کوہساروں سے تو ٹکرائے ہیں

    زندگی تیرے حوادث ہم کو

    کچھ نہ کچھ راہ پہ لے آئے ہیں

    سنگ ریزوں سے خزف پاروں سے

    کتنے ہیرے کبھی چن لائے ہیں

    اتنے مایوس تو حالات نہیں

    لوگ کس واسطے گھبرائے ہیں

    ان کی جانب نہ کسی نے دیکھا

    جو ہمیں دیکھ کے شرمائے ہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    آج مدت میں وہ یاد آئے ہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites