آج سر سبز کوہ و صحرا ہے

ولی محمد ولی

آج سر سبز کوہ و صحرا ہے

ولی محمد ولی

MORE BYولی محمد ولی

    آج سر سبز کوہ و صحرا ہے

    ہر طرف سیر ہے تماشا ہے

    چہرۂ یار و قامت زیبا

    گل رنگین و سرو رعنا ہے

    معنی حسن و معنی خوبی

    صورت یار سوں ہویدا ہے

    دم جاں بخش نو خطاں مج کوں

    چشمۂ خضر ہے مسیحا ہے

    کمر نازک و دہان صنم

    فکر باریک ہے معما ہے

    مو بہ مو اس کوں ہے پریشانی

    زلف مشکیں کا جس کوں سودا ہے

    کیا حقیقت ہے تجھ تواضع کی

    یو تلطف ہے یا مداوا ہے

    سبب دل ربائی عاشق

    مہر ہے لطف ہے دلاسا ہے

    جوں ولیؔ رات دن ہے محو خیال

    جس کوں تجھ وصل کی تمنا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY