آخری کوشش بھی کر کے دیکھتے

منیش شکلا

آخری کوشش بھی کر کے دیکھتے

منیش شکلا

MORE BYمنیش شکلا

    آخری کوشش بھی کر کے دیکھتے

    پھر اسی در سے گزر کے دیکھتے

    گفتگو کا کوئی تو ملتا سرا

    پھر اسے ناراض کر کے دیکھتے

    کاش جڑ جاتا وہ ٹوٹا آئنہ

    ہم بھی کچھ دن بن سنور کے دیکھتے

    رہگزر ہی کو ٹھکانا کر لیا

    کب تلک ہم خواب گھر کے دیکھتے

    کاش مل جاتا کہیں ساحل کوئی

    ہم بھی کشتی سے اتر کے دیکھتے

    ہو گیا طاری سنورنے کا نشہ

    ورنہ خواہش تھی بکھر کے دیکھتے

    درد ہی گر حاصل ہستی ہے تو

    درد کی حد سے گزر کے دیکھتے

    مأخذ :
    • کتاب : Khwab Patthar Ho Gaye (Pg. 8)
    • Author : Manish Shukla
    • مطبع : Skylark House of Publications, 52 Shiv Vihar, Sector-1, Jankipuram, Lucknow-21 (2012)
    • اشاعت : 2012

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے