عالم کی مشکلات کو آساں بنائیے

حرماں خیرآبادی

عالم کی مشکلات کو آساں بنائیے

حرماں خیرآبادی

MORE BYحرماں خیرآبادی

    عالم کی مشکلات کو آساں بنائیے

    اب درد دل کو مایۂ ایماں بنائیے

    یا کیجئے نہ شکوۂ بے لطفیٔ خلش

    یا دل کے لخت لخت کو پیکاں بنائیے

    یا آرزوئے لطف و کرم ترک کیجئے

    یا حال درد قابل درماں بنائیے

    یا منہ نہ موڑیئے کبھی آلام دہر سے

    یا زندگی کو بے سر و ساماں بنائیے

    آنے ہی کو ہے منزل مقصود کی خبر

    شیرازۂ حیات پریشاں بنائیے

    آسانیوں کو موجب آفات جانیے

    دشواریوں کو وجہ صد امکاں بنائیے

    جلووں کو قید رسم سے آزاد کیجئے

    عالم کو ہر نگاہ میں حیراں بنائیے

    تکلیف کیجئے کبھی حرماںؔ کے حال پر

    اک بے نوا کو بندۂ احساں بنائیے

    مأخذ :
    • کتاب : Scan File Mail By Salim Saleem

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY