عام ہو فیض بہاراں تو مزا آ جائے

سید عابد علی عابد

عام ہو فیض بہاراں تو مزا آ جائے

سید عابد علی عابد

MORE BYسید عابد علی عابد

    عام ہو فیض بہاراں تو مزا آ جائے

    چاک ہوں سب کے گریباں تو مزا آ جائے

    واعظو میں بھی تمہاری ہی طرح مسجد میں

    بیچ دوں دولت ایماں تو مزا آ جائے

    کیسی کیسی ہے شب تار یہاں چیں بہ جبیں

    صبح اک روز ہو خنداں تو مزا آ جائے

    ساقیا ہے تری محفل میں خداؤں کا ہجوم

    محفل افروز ہو انساں تو مزا آ جائے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    عام ہو فیض بہاراں تو مزا آ جائے نعمان شوق

    مآخذ:

    • کتاب : Jadeed Shora-e-Urdu (Pg. 698)
    • Author : Dr. Abdul Wahid
    • مطبع : Feroz sons Printers Publishers and Stationers

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY