ان آنکھوں کی مستی کے مستانے ہزاروں ہیں

شہریار

ان آنکھوں کی مستی کے مستانے ہزاروں ہیں

شہریار

MORE BYشہریار

    ان آنکھوں کی مستی کے مستانے ہزاروں ہیں

    ان آنکھوں سے وابستہ افسانے ہزاروں ہیں

    اک تم ہی نہیں تنہا الفت میں مری رسوا

    اس شہر میں تم جیسے دیوانے ہزاروں ہیں

    اک صرف ہمیں مے کو آنکھوں سے پلاتے ہیں

    کہنے کو تو دنیا میں مے خانے ہزاروں ہیں

    اس شمع فروزاں کو آندھی سے ڈراتے ہو

    اس شمع فروزاں کے پروانے ہزاروں ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY