آنکھوں سے مری اس لیے لالی نہیں جاتی

وصی شاہ

آنکھوں سے مری اس لیے لالی نہیں جاتی

وصی شاہ

MORE BYوصی شاہ

    آنکھوں سے مری اس لیے لالی نہیں جاتی

    یادوں سے کوئی رات جو خالی نہیں جاتی

    اب عمر نہ موسم نہ وہ رستے کہ وہ پلٹے

    اس دل کی مگر خام خیالی نہیں جاتی

    مانگے تو اگر جان بھی ہنس کے تجھے دے دیں

    تیری تو کوئی بات بھی ٹالی نہیں جاتی

    آئے کوئی آ کر یہ ترے درد سنبھالے

    ہم سے تو یہ جاگیر سنبھالی نہیں جاتی

    معلوم ہمیں بھی ہیں بہت سے ترے قصے

    پر بات تری ہم سے اچھالی نہیں جاتی

    ہم راہ ترے پھول کھلاتی تھی جو دل میں

    اب شام وہی درد سے خالی نہیں جاتی

    ہم جان سے جائیں گے تبھی بات بنے گی

    تم سے تو کوئی راہ نکالی نہیں جاتی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    وصی شاہ

    وصی شاہ

    RECITATIONS

    وصی شاہ

    وصی شاہ,

    وصی شاہ

    Ankhon se meri isliye laali nahin jaati وصی شاہ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے