آرزو کو روح میں غم بن کے رہنا آ گیا

اختر انصاری

آرزو کو روح میں غم بن کے رہنا آ گیا

اختر انصاری

MORE BY اختر انصاری

    آرزو کو روح میں غم بن کے رہنا آ گیا

    سہتے سہتے ہم کو آخر رنج سہنا آ گیا

    دل کا خوں آنکھوں میں کھنچ آیا چلو اچھا ہوا

    میری آنکھوں کو مرا احوال کہنا آ گیا

    سہل ہو جائے گی مشکل ضبط سوز و ساز کی

    خون دل کو آنکھ سے جس روز بہنا آ گیا

    میں کسی سے اپنے دل کی بات کہہ سکتا نہ تھا

    اب سخن کی آڑ میں کیا کچھ نہ کہنا آ گیا

    جب سے منہ کو لگ گئی اخترؔ محبت کی شراب

    بے پیے آٹھوں پہر مدہوش رہنا آ گیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites