اب بھی میں یار ہوں ذرا ہوش و حواس میں

نور این ساحر

اب بھی میں یار ہوں ذرا ہوش و حواس میں

نور این ساحر

MORE BYنور این ساحر

    اب بھی میں یار ہوں ذرا ہوش و حواس میں

    تھوڑی شراب اور دے میرے گلاس میں

    اسکول کا وہ وقت مجھے اب بھی یاد ہے

    پڑھتا تھا اس کا چہرہ میں اپنے کلاس میں

    ہر کوئی اس کے واسطے مرنے کو پھرتا تھا

    ہر کوئی جی رہا تھا بس اوس کی ہی آس میں

    سب لڑکے اس کو دیکھ کے بیتاب ہوتے تھے

    ہوتی تھی اس طرح سے وہ داخل کلاس میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY