اب دل کی یہ شکل ہو گئی ہے

رئیس امروہوی

اب دل کی یہ شکل ہو گئی ہے

رئیس امروہوی

MORE BYرئیس امروہوی

    اب دل کی یہ شکل ہو گئی ہے

    جیسے کوئی چیز کھو گئی ہے

    پہلے بھی خراب تھی یہ دنیا

    اب اور خراب ہو گئی ہے

    اس بحر میں کتنی کشتیوں کو

    ساحل کی ہوا ڈبو گئی ہے

    گل جن کی ہنسی اڑا چکے تھے!

    شبنم بھی انہیں کو رو گئی ہے

    کل سے وہ اداس اداس ہیں کچھ

    شاید کوئی بات ہو گئی ہے

    شاداب ہے جس سے کشت ہستی

    وہ بیج بھی موت بو گئی ہے

    مآخذ
    • کتاب : Hikayat-e-nai (Pg. 68)
    • Author : Rais Amrohvi
    • مطبع : Rais Acadami, Garden Est. Krachi-3 (1975)
    • اشاعت : 1975

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY