اب حرف تمنا کو سماعت نہ ملے گی

پیرزادہ قاسم

اب حرف تمنا کو سماعت نہ ملے گی

پیرزادہ قاسم

MORE BYپیرزادہ قاسم

    اب حرف تمنا کو سماعت نہ ملے گی

    بیچوگے اگر خواب تو قیمت نہ ملے گی

    تشہیر کے بازار میں اے تازہ خریدار

    زیبائشیں مل جائیں گی قامت نہ ملے گی

    لمحوں کے تعاقب میں گزر جائیں گی صدیاں

    یوں وقت تو مل جائے گا مہلت نہ ملے گی

    سوچا ہی نہ تھا یوں بھی اسے یاد رکھیں گے

    جب اس کو بھلانے کی بھی فرصت نہ ملے گی

    تا عمر وہی کار زیاں عشق رہا یاد

    حالانکہ یہ معلوم تھا اجرت نہ ملے گی

    تعبیر نظر آنے لگی خواب کی صورت

    اب خواب ہی دیکھو گے بشارت نہ ملے گی

    آئینہ صفت وقت ترا حسن ہیں ہم لوگ

    کل آئنے ترسیں گے تو صورت نہ ملے گی

    RECITATIONS

    پیرزادہ قاسم

    پیرزادہ قاسم

    پیرزادہ قاسم

    اب حرف تمنا کو سماعت نہ ملے گی پیرزادہ قاسم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY