اب عشق رہا نہ وہ جنوں ہے

بسمل سعیدی

اب عشق رہا نہ وہ جنوں ہے

بسمل سعیدی

MORE BY بسمل سعیدی

    اب عشق رہا نہ وہ جنوں ہے

    طوفان کے بعد کا سکوں ہے

    احساس کو ضد ہے درد دل سے

    کم ہو تو یہ جانیے فزوں ہے

    راس آئی ہے عشق کو زبونی

    جس حال میں دیکھیے زبوں ہے

    باقی نہ جگر رہا نہ اب دل

    اشکوں میں ہنوز رنگ خوں ہے

    اظہار ہے درد دل کا بسملؔ

    الہام نہ شاعری فسوں ہے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اب عشق رہا نہ وہ جنوں ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY