اب کوئی گلشن نہ اجڑے اب وطن آزاد ہے

ساحر لدھیانوی

اب کوئی گلشن نہ اجڑے اب وطن آزاد ہے

ساحر لدھیانوی

MORE BYساحر لدھیانوی

    اب کوئی گلشن نہ اجڑے اب وطن آزاد ہے

    روح گنگا کی ہمالہ کا بدن آزاد ہے

    کھیتیاں سونا اگائیں وادیاں موتی لٹائیں

    آج گوتم کی زمیں تلسی کا بن آزاد ہے

    مندروں میں سنکھ باجے مسجدوں میں ہو اذاں

    شیخ کا دھرم اور دین برہمن آزاد ہے

    لوٹ کیسی بھی ہو اب اس دیش میں رہنے نہ پائے

    آج سب کے واسطے دھرتی کا دھن آزاد ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    محمد رفیع

    محمد رفیع

    مآخذ
    • کتاب : Kulliyat-e-Sahir Ludhianvi (Pg. 347)
    • Author : SAHIR LUDHIANVI
    • مطبع : Farid Book Depot (Pvt.) Ltd

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY