aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

اب سوچئے تو دام تمنا میں آ گئے

عظیم حیدر سید

اب سوچئے تو دام تمنا میں آ گئے

عظیم حیدر سید

MORE BYعظیم حیدر سید

    اب سوچئے تو دام تمنا میں آ گئے

    دیوار و در کو چھوڑ کے صحرا میں آ گئے

    تصویر تھے جو اولیں سرشاریوں میں لوگ

    وہ زخم بن کے چشم تمنا میں آ گئے

    ان سے بھی پوچھئے کبھی اپنی زمیں کا کرب

    جو ساحلوں کو چھوڑ کے دریا میں آ گئے

    وحشت نے یوں تو خوب دیا ہر قدم پہ ساتھ

    لیکن ترے فریب دل آرا میں آ گئے

    اس انجمن میں انجم و زہرہ بھی تھے مگر

    ہم شب گزیدہ سحر ثریا میں آ گئے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    اب سوچئے تو دام تمنا میں آ گئے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے