اب انہیں مجھ سے کچھ حجاب نہیں

شبنم رومانی

اب انہیں مجھ سے کچھ حجاب نہیں

شبنم رومانی

MORE BYشبنم رومانی

    اب انہیں مجھ سے کچھ حجاب نہیں

    اب ان آنکھوں میں کوئی خواب نہیں

    میری منزل ہے روشنی لیکن

    میری قدرت میں آفتاب نہیں

    تجھ کو ترتیب دے رہا ہوں میں

    میری غزلوں کا انتخاب نہیں

    اب سنا ہے کہ میرے دل کی طرح

    ایک صحرا ہے ماہتاب نہیں

    شام اتنی کبھی اداس نہ تھی

    کیوں تری زلف میں گلاب نہیں

    یوں نہ پڑھیے کہیں کہیں سے ہمیں

    ہم بھی انسان ہیں کتاب نہیں

    کہکشاں سو رہی ہے اے شبنمؔ

    حسن آنگن میں محو خواب نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY