اب اٹھاؤ نقاب آنکھوں سے

صابر دت

اب اٹھاؤ نقاب آنکھوں سے

صابر دت

MORE BYصابر دت

    اب اٹھاؤ نقاب آنکھوں سے

    ہم بھی چن لیں گلاب آنکھوں سے

    آپ کے پاس مے کے پیالے ہیں

    ہم پئیں گے شراب آنکھوں سے

    لاکھ روکا تمہارے آنچل نے

    ہم نے دیکھا حجاب آنکھوں سے

    الجھی الجھی ہے زلف ساون کی

    برسا برسا شباب آنکھوں سے

    لوگ کرتے ہیں خواب کی باتیں

    ہم نے دیکھا ہے خواب آنکھوں سے

    آبرو رکھ لو آج موسم کی

    مل گیا ہے جواب آنکھوں سے

    مآخذ:

    • کتاب : Mauje Aariz (Pg. 107)

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY